مصنف کی تحاریر : قاری محمد عبدالرحیم

صحافت اورصحافتی تنظیمیں : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

صحافت آج کی دنیا سے پہلے بھی دنیا میں موجود تھی،اور صحافت ایک ازلی شعور کا نام ہے،جو کسی انسان کو فطری طور پر عطاہوتا ہے،باقاعدہ پرنٹ اورالیکٹرانک میڈیا کے وجود سے پہلے بھی فطری صحافی شاعری اور آفسانہ نویسی کی صورت میں صحافت کرتے تھے، انہیں شاعر، آفسانہ نویس،اور ...

مزید پڑھیں »

تم کواسلاف سے کیانسبتِ روحانی ہے؟ قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم ہندوستان میں اسلام کی تبلیغ وترویج واقعتا اہل صفا اولیاء اللہ کے ہی مرہونِ منت ہے،محمدبن قاسم کے بعد محمود غزنوی کا ہندوستان پر فوجی حملہ بھی کسی ولی کی نظر کرم کا مرہونِ منت تھا، اس کے علاوہ مغلیہ سلطنت اور دوسرے لوگ بھی سارے ...

مزید پڑھیں »

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم پاکستان کی غریب عوام اورامیر اشرافیہ کی پوری داستان اس مصرع کے اندر سموئی ہوئی ہے،پاکستان کے وجود پذیر ہونے کے ساتھ ہی غریب اور محبِ اسلام عوام آگ اور خون کے دریا عبور کرکے کٹے پھٹے، بچھڑے اجڑے، بھاگتے گھسٹتے، جب اس حدوداربعہ کے اندرداخل ...

مزید پڑھیں »

کچھ بھی نہ کہا کچھ کہہ بھی گئے : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم صحافت اور شاعری پرانے زمانے سے جاری ہے، بادشاہوں والیانِ ریاست نوابوں اور امیروں کے دروازے شعراء اور قصیدہ خوانوں،علماء اور دانشوروں  کے لیے کھلے رہتے تھے۔ہر بیان باز جگت باز اور میراثی کسی نہ کسی دربار،راجدھانی،حویلی سے منصوب ہوتا تھا،بڑے بڑے شعراء فردوسی اور مرزا ...

مزید پڑھیں »

الارض للہ! قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم علامہ اقبال نے  اپنے مجموعہ ”بالِ جبریل“  میں درجِ بالاعنوان سے ایک نظم لکھی ہے۔جس کا پس منظر شاید مزارعت ہے،کہ علامہ نے اس کے مقطع میں فرمایاہے۔ ”دہ خدایا یہ زمیں تیری نہیں تیری نہیں،تیرے آباکی نہیں تیری نہیں میری نہیں “ دہ خدا،نمبردار، ضلع ...

مزید پڑھیں »

 اس سے پہلے کہ کچھ نہ رہے : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم پاکستانی غریب عوام جو قبل ازپاکستان بھی انہیں حالات میں تھی،سکھوں نے گھروں پر پہرے لگا رکھے تھے کہ مسلمان گندم نہ کھائیں،وہ رات کو گھروں میں گھس کر چکیوں کوچیک کرتے تھے اگر کسی کی چکی سے گندم برآمدہوجائے تو اسے سزادی جاتی تھی، انگریزوں ...

مزید پڑھیں »

باغ  اجاڑیں اونٹ، پابندی بکریوں پر: قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم پاکستان میں نہ وسائل کی کمی ہے نہ شعور کی،لیکن پاکستان اس کے باوجود ایک نشانِ عبرت بنتا جارہا ے۔اس لیے کہ یہ ملک بنانے والوں نے ایک نظرئیے کو اپنا منشور بنایا لیکن ملک بننے کے بعد والوں نے نظرئیے کو دفن کردیا اورپھر وہی ...

مزید پڑھیں »

منزل انہیں ملی جو شریکِ سفرنہ تھے : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم پاکستان تقدیرِ مبرم کے تحت وجود میں آگیا،یا پھر بے گناہ مارے گئے مسلمانوں کی فریادی روحوں کی قبولیت کا وقت ہواچاہتا تھا،تو تھوڑی سی جدوجہد سے ایک علیحدہ مملکت وجود پذیر ہوگئی،لیکن وہ جن کی فریاد یا جن کی جدوجہد سے یہ معمہ سرہوا،وہ اوران ...

مزید پڑھیں »

سیاست بھی سیکھو! قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم حکمرانی یا شہرت اکثر ستارے کی بلندی  پر منحصر ہوتی ہے،یعنی تقدیرمیں ہوتی ہے۔پرانے زمانے کی حکایات میں ہے کہ ایک دفعہ عقل اورکرم میں تقرار ہوگئی عقل نے کہا کہ اگر میں ساتھ نہ دوں توتم کسی کوسربلندنہیں کرسکتے۔کرم یعنی تقدیرنے کہا توکسی سے علیحدہ ...

مزید پڑھیں »

خادمِ پاکستان  کے نام : قاری محمدعبدالرحیم

آنکھ سے چھلکاآنسو اورجا ٹپکا شراب میں : قاری محمدعبدالرحیم

تحریر : قاری محمدعبدالرحیم فارسی کا ایک مقولہ ہے کہ ہرکہ خدمت کرد مخدوم شد،بنابریں وزیرِ اعظم پاکستان میاں شہباز شریف نے وزیرِ اعظم کا حلف لینے کے بعد، صحافیوں سے کہاہے کہ آپ مجھے وزیرِ اعظم  کے بجائے خادمِ پاکستان کہیں،۔انکساری اور شرافت اس خاندان کی گھٹی میں ہے ...

مزید پڑھیں »
0Shares